ETV Bharat / opinion

دوردرشن کے لوگو کا رنگ تبدیل کرنا ایک سیاسی فیصلہ - DD Logo Controversy

author img

By ETV Bharat Urdu Team

Published : Apr 21, 2024, 11:25 AM IST

قومی نشریاتی ادارے دوردرشن کے لوگو کو ایک مخصوص زعفرانی رنگ میں تبدیل کرکے نیا تنازعہ کھڑا کردیا گیا ہے۔ ڈی ڈی نیوز کے ایکس پلیٹ فارم پر اس کے اعلان کیے جانے کے بعد اس فیصلے کی تنقید اور کچھ صارفین نے براڈکاسٹر پر انتخابات سے قبل سیاسی تعصب کا الزام عائد کیا ہے۔ ای ٹی وی بھارت کے سینئر نامہ نگار گوتم دیبرائے کی رپورٹ

DD logo turns saffron
دوردرشن کے لوگو کا رنگ تبدیل کرنا ایک سیاسی فیصلہ

نئی دہلی: بھارتی سرکاری ٹیلی ویژن دوردرشن نے اپنے نیوز چینل ڈی ڈی نیوز کے لوگو کو زعفرانی رنگ میں تبدیل کر دیا ہے۔ میڈیا کے تجربہ کاروں اور ماہرین کا خیال ہے کہ دوردرشن سماچار کے لوگو کو سرخ سے زعفرانی رنگ میں تبدیل کرنے سے ناظرین اور تجارتی منافع میں اضافہ کا سبب نہیں بنے گا۔

دوردرشن سماچار کے لوگو کو تبدیل کرنے پر پرسار بھارتی کے سابق ایڈیٹر اور میڈیا ماہر راجندر بھٹ نے کہا کہ محض رنگ بدلنے سے براڈکاسٹر کو سامعین کی توجہ مبذول کرانے میں مدد نہیں ملے گی۔ ای ٹی وی بھارت سے بات کرتے ہوئے بھٹ نے مزید کہا کہ یہ پہلی بار نہیں ہے کہ لوگو کا رنگ تبدیل کیا گیا ہو۔ ایسا کئی بار کیا جا چکا ہے۔ دراصل تھیم سانگ کو بھی تبدیل کر دیا گیا تھا۔

بھٹ نے دعوی کیا، ایسا لگتا ہے کہ لوگو کا رنگ تبدیل کرنا ایک سیاسی فیصلہ ہے، کیونکہ اس طرح کا کوئی بھی فیصلہ لینے سے پہلے تین پہلوؤں، جمالیاتی نقطہ نظر، تجارتی منافع کا امکان اور سیاسی نقطہ نظر کو سامنے رکھا جاتا ہے لیکن اس فیصلے میں دو نقطۂ نظر، جمالیاتی اور تجارتی وژن نظر نہیں آتے۔

اسی طرح کے جذبات کا اظہار کرتے ہوئے تجربہ کار صحافی اور میڈیا ماہر، پردیپ سوربھ نے کہا کہ 'ہم دوردرشن کے لوگو اور رنگوں کو تبدیل کرنے کی اہمیت کو نہیں سمجھ سکے ہیں'۔ سوربھ نے دعویٰ کیا کہ یہ صرف ایک سیاسی فیصلہ نظر آرہا ہے، کیونکہ لوگو اور رنگ تبدیل کرنے سے براڈکاسٹروں کو دوسرے چینلز سے مقابلہ کرنے یا مقبولیت حاصل کرنے میں مدد نہیں ملے گی، یہ تبدیلی صرف سیاسی فیصلہ ہے۔

پرسار بھارتی کے سی ای او گورو دویدی نے حال ہی میں ایکس پلیٹ فارم پر ڈی ڈی نیوز کی ایک پوسٹ دوبارہ پوسٹ کی، جس کے کیپشن میں لکھا کہ 'جبکہ ہماری اقدار وہی ہیں، لیکن اب ہم ایک نئے اوتار میں دستیاب ہیں۔ ہم میں یہ کہنے کی ہمت ہے۔ رفتار سے زیادہ درستگی، دعووں پر حقائق، سنسنی خیزی پر سچ کیونکہ اگر یہ ڈی ڈی نیوز پر ہے تو یہ سچ ہے۔ڈی ڈی نیوز - بھروسہ سچ کا۔

جب سے قومی نشریاتی ادارے ڈی ڈی نیوز نے اپنا نیا لوگو لانچ کیا ہے تب سے حزب اختلاف کی جانب سے اس کے مبینہ 'زعفرانائزیشن' کے لیے تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔

ڈی ڈی نیوز کے لوگو میں تبدیلی پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے ترنمول کانگریس کے راجیہ سبھا ایم پی جواہر سرکار نے ٹوئٹر پر ایک ویڈیو پیغام میں کہا، 'پرسار بھارتی کے سابق سی ای او کے طور پر انتخابات سے عین قبل دوردرشن کے لوگو کی بھگوا کاری کو دیکھ کر دکھ ہوتا ہے۔ یہ ایک 'غیر جانبدار' پبلک براڈکاسٹر اور متعصب حکومت/گورننس کے ساتھ ایک مذہب اور سنگھ پریوار کے رنگ میں رنگنے سے ووٹروں کو متاثر کرے گا۔ انھوں نے مزید لکھا کہ یہ اب پرسار بھارتی نہیں ہے، پرچار بھارتی ہے۔

مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے سوشل میڈیا ایکس پر لکھا کہ انتخابات کے دوران دوردرشن کے لوگو کا رنگ تبدیل کرنا غیر اخلاقی اور غیر قانونی ہے۔ اس طرح دوردرشن بی جے پی کے تئیں اپنا تعصب ظاہر کر رہا ہے۔ الیکشن کمیشن لوگو کی اس تبدیلی کو کیسے قبول کر سکتا ہے؟ کمیشن کو پرانے لوگو کو واپس لوٹانا چاہیے۔

انہوں نے لکھا، 'جب ملک بھر میں قومی انتخابات ہو رہے ہیں، اس دوران میں ہمارے دوردرشن لوگو کے اچانک بھگوا ہونے اور رنگ بدلنے سے حیران ہوں! یہ مکمل طور پر غیر اخلاقی اور غیر قانونی ہے، قومی پبلک براڈکاسٹر کے بی جے پی کی زباں بن کر تعصب کی بلند آواز میں بات کر رہا ہے۔ انھوں نے مزید لکھا کہ جب لوگ انتخابی موڈ میں ہوں تو الیکشن کمیشن آف انڈیا ماڈل کوڈ آف کنڈکٹ کی اس کھلی خلاف ورزی کی اجازت کیسے دے سکتا ہے؟ الیکشن کمیشن آف انڈیا کو اسے فوری طور پر روکنا چاہیے اور دوردرشن کے لوگو کے اصل رنگ میں واپس لوٹانے کا حکم صادر کرنا چاہیے۔

لوگو کے نئے روپ پر تبصرہ کرتے ہوئے ڈی ڈی نیوز نے ٹوئٹر پر لکھا، 'چھ ماہ کی محنت بالآخر 16 اپریل کو رنگ لائی۔ جب قومی عوامی نشریاتی چینل، ڈی ڈی نیوز نے اپنی تازہ شکل و صورت سے پردہ اٹھایا۔ ڈی ڈی نیوز نے اپنے اسٹوڈیو سیٹ اپ کو جدید ترین ٹیکنالوجی کے ساتھ اپ گریڈ کیا ہے تاکہ جدید ترین آلات کا استعمال کرتے ہوئے خبریں فراہم کی جاسکیں۔

پرسار بھارتی کے کچھ عہدیداروں نے کہا کہ چینل نے ماضی میں کئی بار رنگ اور لوگو بدلے ہیں۔ ایک اور اہلکار پریا کمار نے ٹوئٹر پر لکھا، 'ڈی ڈی نیوز خبروں کی دنیا میں اعتماد پیدا کرتا ہے، اور کرتے رہیں گے۔ ایک نئے جوش کے ساتھ ایک نئے روپ میں۔ پرسار بھارتی کے سی ای او سے رابطہ کرنے کی کئی کوششوں کے باوجود، وہ اس معاملے پر تبصرہ کرنے کے لیے دستیاب نہیں تھے۔

ETV Bharat Logo

Copyright © 2024 Ushodaya Enterprises Pvt. Ltd., All Rights Reserved.