زرمبادلہ کے ذخائر 5.74 ارب ڈالر اضافے کے بعد 622.5 ارب ڈالر ہوگئے

author img

By UNI (United News of India)

Published : Feb 9, 2024, 10:18 PM IST

India's forex reserves rose to 622.5 billion dollars

India's Forex Reserves ریزرو بینک آف انڈیا کے گورنر شکتی کانتا داس نے جمعرات کو ایم پی سی کے اہم فیصلوں کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کے زرمبادلہ کے ذخائر 2 فروری کو ختم ہونے والے ہفتے میں 622.5 بلین ڈالر تھے۔ انہوں نے کہا کہ زرمبادلہ کے ذخائر میں 5.74 بلین ڈالر کا اضافہ ہوا ہے۔

ممبئی: زرمبادلہ کے اثاثوں اور سونے میں اضافے کی وجہ سے ملک کے زرمبادلہ کے ذخائر 02 فروری کو ختم ہونے والے ہفتے میں 5.74 بلین ڈالر بڑھ کر 622.5 بلین ڈالر ہوگئے۔اس کے ساتھ ساتھ گزشتہ ہفتے ملک کے زرمبادلہ کے ذخائر 591 ملین ڈالر کے اضافے سے 616.7 ارب ڈالر تک پہنچ گئے۔

جمعہ کو ریزرو بینک کے جاری کردہ ہفتہ وار اعداد و شمار کے مطابق 02 فروری کو ختم ہونے والے ہفتے میں غیر ملکی کرنسی کے اثاثے، جو کہ غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر کا سب سے بڑا جزو ہے، 5.2 بلین ڈالر بڑھ کر 551.3 بلین ڈالر تک پہنچ گیا۔ اسی طرح اس عرصے کے دوران سونے کے ذخائر 608 ملین ڈالر بڑھ کر 48.1 بلین ڈالر ہو گئے۔وہیں، زیر جائزہ ہفتے میں خصوصی ڈرائنگ رائٹس (ایس ڈی آر) میں 58 ملین ڈالر کی کمی ہوئی اور 18.2 بلین ڈالر پر آگئے۔ تاہم، اس عرصے کے دوران بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے پاس ذخائر 4.9 بلین ڈالر پر مستحکم رہے۔

مزید پڑھیں: زرمبادلہ کے ذخائر میں بڑی کمی

بتادیں کہ گزشتہ روز ریزرو بینک آف انڈیا نے اقتصادی سرگرمیوں میں جاری تیزی کا حوالہ دیتے ہوئے اور مہنگائی پر گہری نظر رکھتے ہوئے مسلسل چھٹی بار پالیسی ریٹ میں کوئی تبدیلی نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، جس سے سود کی شرحوں میں کمی کی امید لگائے عام لوگوں کو مایوسی ہاتھ لگی ہے مئی 2022 سے 250 بیسس پوائنٹس پر لگاتار چھ مرتبہ اضافے کے بعد گزشتہ سال اپریل میں شرح میں اضافہ سائیکل کو روک دیا گیا تھا اور یہ اب بھی اسی سطح پر ہے۔

آر بی آئی کے گورنر شکتی کانت داس نے جمعرات کو رواں مالی سال کی آخری دو ماہی مانیٹری پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ مانیٹری پالیسی کمیٹی (ایم پی سی) نے مانیٹری پالیسی کوبرقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس کے پیش نظر ریپو ریٹ کے ساتھ ہی تمام اہم پالیسی ریٹ بدستور برقرار ہیں اور ہم آہنگی کے رخ کو واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے۔یہ اعلان کرتے ہوئے،داس نے کہا کہ فی الحال پالیسی ریٹ میں کوئی تبدیلی نہیں کی جا رہی ہے لیکن پالیسی ریٹ کو برقرار رکھنے کے درمیان کمیٹی نے ایڈجسٹمنٹ والے رخ سے پیچھے ہٹنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کمیٹی کے اس فیصلے کے بعد فی الحال پالیسی ریٹ میں کوئی اضافہ نہیں ہوگا۔ ریپو ریٹ 6.5 فیصد، اسٹینڈرڈ ڈپازٹ فیسیلٹی ریٹ (ایس ڈی ایف آر) 6.25 فیصد، مارجنل اسٹینڈنگ فیسیلٹی ریٹ (ایم ایس ایف آر) 6.75 فیصد، بینک ریٹ 6.75 فیصد، فکسڈ ریزرو ریپو ریٹ 3.35 فیصد، کیش ریزرو ریشو 4.50 فیصد، قانونی لیکویڈیٹی تناسب 18 فیصدپر برقرار ہے۔داس نے کہا کہ عالمی اقتصادی سرگرمیوں میں سست روی کے درمیان ہندوستانی معیشت اور مالیاتی شعبہ بااختیاراور مضبوط ہوا۔
(یو این آئی)

ETV Bharat Logo

Copyright © 2024 Ushodaya Enterprises Pvt. Ltd., All Rights Reserved.